جہلم

بااثر رکشہ ڈرائیوروں اور ریڑھی بانوں کی کثیر تعداد نے سروس روڈ جہلم پر اپنی اجارہ داری قائم کر لی

جہلم: جی ٹی روڈ کے اطراف سروس روڈ پر بس سٹاپس اور بالخصوص مقامی افراد کی گاڑیوں موٹر سائیکلوں کیلئے تعمیر کئے گئے سروس روڈز پرچنگ چی رکشاؤں ، دکانداروں ، ریڑھی بانوں کے غیر قانونی قبضے ، دکانداروں نے این ایچ اے ، میونسپل کمیٹی کی سرپرستی میں تجاوزات قائم کر لیں ، سروس روڈ استعمال کرنے والے افراد کو مشکلات کا سامنا، بااثر رکشہ ڈرائیوروں کے ساتھ ساتھ ریڑھی بانوں کی کثیر تعداد نے سروس روڈ پر اپنی اجارہ داری قائم کر لی، شہری سراپا احتجاج ہیں۔

تفصیلات کے مطابق جادہ جی ٹی روڈ کے دونوں اطراف این ایچ اے نے بین الاضلاعی مسافر گاڑیوں کو کھڑا کرنے سواریاں اتارنے اور بٹھانے کے لئے سروس روڈ تعمیر کی اور مقامی افراد کی سہولت کے لئے جی ٹی روڈ سے ملحقہ جگہ پر سروس روڈ تعمیر کی گئی تاکہ مقامی افراد جی ٹی روڈ استعمال کرنے کی بجائے سروس روڈ استعمال کریں تاکہ حادثات میں کمی واقع ہو سکے ، اس کے برعکس رکشہ ڈرائیوروں نے سروس روڈ پر رکشہ ا سٹینڈ قائم کرلئے ہیں۔

دکانداروں نے دکانوں کا سامان اور ہوٹلوں ، ورکشاپس مالکان نے اپنا اپنا سامان سروس روڈ پر سجا کر سروس روڈ استعمال کرنے والے چھوٹی گاڑیوں اور موٹر سائیکل سواروں کے لئے مشکلات پیدا کر رکھی ہیں جبکہ لاہور ، راولپنڈی سے آنے والی گاڑیاں بھی سروس روڈ پر تجاوزات قائم ہونے کیوجہ سے جی ٹی روڈ پر گاڑیاں کھڑی کرکے سواریاں اتارتے اور بٹھاتے نظرآتے ہیں۔

مقامی افراد نے آئی جی موٹر وے پولیس، ڈپٹی کمشنر، ارباب اختیار این ایچ اے سے مطالبہ کیا ہے کہ سروس روڈ پر قائم ہونے والی تجاوزات کے خاتمے کے لئے عملی اقدامات اٹھائے جائیں تاکہ کروڑوں روپے سے تعمیر ہونے والی سروس روڈ سے مقامی افراد مستفید ہو سکیں اور شہریوں کی پریشانی کا خاتمہ ممکن ہو سکے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button