جلالپور شریفپنڈدادنخاناہم خبریں

جلالپور شریف کی واٹر سپلائی کی توسیع، ٹھیکیدار 2 ٹیوب ویلوں کی بورنگ کرنے کے بعد غائب

پنڈدادنخان کے علاقہ جلالپور شریف کی واٹر سپلائی کی توسیع کے لئے 2 کروڑروپے کے فنڈز منظور کئے گئے ، ٹھیکیدار 2 ٹیوب ویلوں کی بورنگ کرنے کے بعد غائب، شہری صاف پانی کی بوند بوند کو ترس اٹھے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنما سابق وفاقی وزیر چوہدری فواد حسین نے جہلم کے تاریخی گاؤں جلالپور شریف کے علاقہ مکینوں کی مشکلات کو مد نظررکھتے ہوئے 2 کروڑ روپے کے فنڈز منظور کروائے تاکہ تاریخی قصبہ جلالپور شریف میں 2 ٹیوب ویلز لگائے جائیں اور پانی کی فراہمی کے لئے 2 ٹینکیاں تعمیر کی جائیں اور شہریوں کو صاف پانی کی فراہمی کے لئے نئی پائپ لائنیں بچھائی جائیں ، وفاقی حکومت کے ختم ہونے کے فوراً بعد ٹھیکیدار نے نامعلوم وجوہات کی بناء پر واٹر سپلائی سکیم کا کام روک دیا اور ٹھیکیدار غائب ہو گیا۔

علاقہ مکینوں کا کہنا ہے کہ ٹھیکیدار نے 2 ٹیوب ویل کی بورنگ کروائی اس کے بعد ٹھیکیدار رفو چکر ہو گیا ہے جس کیوجہ سے جلالپور شریف کے علاقہ مکینوں کو صاف پانی کی فراہمی کے حوالے سے شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ 4 دہائیاں قبل جلالپور شریف میں واٹر سپلائی کے پائپ زیر زمین بچھائے گئے جو کہ جگہ جگہ سے ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہو چکے ہیں اور 1 ٹیوب ویل جو کہ ہزاروں نفوس پر مشتمل آبادی کے لئے ناکافی ہے جس کی وجہ سے مکینوں کو بروقت پانی کی دستیابی نہیں ہو رہی جس وجہ سے مکینوں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہاہے۔

علاقہ مکینوں نے وزیراعلیٰ پنجاب چوہدری پرویز الٰہی، پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی رہنما چوہدری فواد حسین سے مطالبہ کیا ہے کہ جلالپور شریف واٹر سپلائی سکیم کے کام کو جلد از جلد مکمل کروایا جائے تاکہ یونین کونسل جلالپور شریف کے مکینوں کو پیش آنے والی مشکلات کا خاتمہ ممکن ہو سکے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button