جہلم

خواتین کالج سول لائن جہلم کے وسط سے گزرنے والا نکاسی آب کا نالہ طالبات کیلئے خطرہ بن گیا

جہلم: گورنمنٹ ایسوسی ایٹ کالج برائے خواتین سول لائن کے وسط سے گزرنے والا نکاسی آب کا نالہ طالبات کے لئے خطرہ بن گیا، گندے پانی والے نالے سے زہریلے کیڑے مکوڑے نکلنا معمول بن گئے، کالج میں زیر تعلیم طالبات خوف میں مبتلا، وزیراعلیٰ پنجاب چوہدری پرویز الٰہی سے نوٹس لینے کا مطالبہ۔

تفصیلات کے مطابق سول لائن روڈ پر واقع ڈنگی پلی کے قریب گورنمنٹ ایسوسی ایٹ کالج برائے خواتین سول لائنز کہ وسط سے نکاسی آب کا نالہ موجود ہے جس کو پختہ کرنے اور اوپر ڈھانپنے کا کوئی انتظام نہیں کیا گیا جس کی وجہ سے زہریلے کیڑے مکوڑے طالبات کے کلاس رومز میں مٹر گشت کرتے دکھائی دیتے ہیں، زہریلے کیڑے مکوڑوں کیوجہ سے طالبات بھی خوف و حراس اور زہنی تناؤ کا شکار ہیں۔

اس حوالے سے طالبات نے اخبار نویسوں سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ 15 سال قبل کالج کی تعمیر کا آغاذ کیا گیا 15 سال گزرنے کے باوجود آج بھی کالج کی عمارت زیر تعمیر ہے فنڈز کا اجراء نہ ہونے کیوجہ سے بیشتر عمارت کھنڈرات کی منظر کشی کررہی ہے جبکہ کالج کے کمپاؤنڈ سے نکاسی آب کا نالہ پختہ نہ ہونے اور نالے کے اوپر پڑیاں نہ ہونے کیوجہ سے زہریلے کیڑے مکوڑے کالج کے اندر گھومتے دکھائی دیتے ہیں۔

طالبات نے وزیراعلیٰ پنجاب چوہدری پرویز الٰہی سے مطالبہ کیا ہے کہ گورنمنٹ ایسوسی ایٹ کالج برائے خواتین سول لائنز جہلم کی نامکمل عمارت کو مکمل کروایا جائے اور ساتھ ہی گندے پانی کے نالے کو پختہ کرنے کے ساتھ ساتھ پڑیاں ڈال کر بند کیا جائے تاکہ زیر تعلیم طالبات کو پیش آنے والی مشکلات کا خاتمہ ممکن ہو سکے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button